Democratic Rulers in Pakistan Or character of Mazaaq Raat

ImageImageImageImageImage

Advertisements

6 thoughts on “Democratic Rulers in Pakistan Or character of Mazaaq Raat

  1. جناب کیا ہی بات ھو اگر تعصب بندی ختم کر کے منصفانہ طریقے سے ایک عام آدمی کو انصاف فراہم کیا جائے،
    ہر ریاست کی اولین ترجیع ہوتی ھے کہ اپنی عوام کے حقوق کو پورا کیا جائے یہاں حکمران عوامی الیکشن سے پیلے وعدے تو کرتے ہیں لیکن اقتدار ملتے ہی نظریں پھیر لیتے ہیں ،
    رینجرز نے گذشتہ کچھ عرصے سے جو مہاجروں کا ماورائے عدالت قتلِ عام کر رکھا ھے جب تک انکا انصاف نہیں مل جاتا آگے کے معملات کی درستگی نہ ممکن ھے، ، اوپر کے حکمرانوں سے نیچے تک درجے کے لوگ ملوث ہیں، دوسے صوبوں سے لوگوں کو کراچی کی عوام کے سروں پر مسلط کر دیا گیا ھے، اور سرکاری اداروں کی چابیاں انہیں تہما دی گئی ہیں جب جسکا دل چاھیے چھاے کے نام پر اغوا کرے قتل کرے اور پھیک دے،
    اگر اب بھی ان حکمرانوں نے ہوش کے ناخن نہ لئیے تو پھر ایک عام آدمی اپنا حق چھینے پر مجبور ہو جائے گا،

  2. 12 Sleeby jangon me yahoodi aur esaiyon ka bohot nuksan huwa 60 lakh se ziada maray gai, pichlay 100saal se ye ab 13 sleebi jang he,jisme musalmano kay hathon musalmanon ko qatal karaya ja raha he

  3. پاکستان کی صورتِ حال دیکھ کر یہی لگ رہا ہے کہ اب آگے گہری کھاءی اور پیچھے اونچا پہاڑ ہے، کھاءی میں اتریے یا پہاڑ چڑھیے، لیکن قوم تو خوابِ خرگوش کے مزے لینے میں مصروف ہے، اجتماعی بے حس قوم ہی نواز شریف اور عمران خان جیسے منافقین اور طالبان حمایتی لوگوں کو ووٹ دے سکتے ہیں۔ اگر کوءی یہ سمجھتا ہے کہ طالبان مذاکرات کر کے اپنے ایجنڈے “یعنی بزورِ بندوق اپنے نظریے کا نفاذ” سے پیچھے ہٹ جاءیں گے تو یہ ان کی بھول ہے۔ خرابی تاریخ پڑھانے والوں کی ہے کہ وہ محمود غزنوی کو اسلام کا ہیرو بتاتا ہے اور خواجہ غریب نواز سے متعلق خاموشی اختیار کر لیتا ہے۔

  4. ISS MULK MAIN SAKHT TAREEN INQILAB KEE ZAROORAT HAI. KHUDA KAY WASTAY PAK FOUJ AGAY BERHAY AUR MULK AUR QUOM KO ISS AZAB SAY NIKALAIN. MQM JIS KAY PEECHAY KARORON MOHIB-E-WATAN AWAM APNI FOUJ KAY SATH SHANA BA SHANA LERNAY KAY LEAY TAYYAR HAIN. FOUJ KO KAMZOR KERNAY KEE SAZISH HO RAHEE HAI, FAISLAY KA WAQT HAI KHUDA NA KHWASTA KAHEEN AISA NA HO KAY SUB KUCH HATH SAY NIKAL JEAY.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s