Shame on You Ansar Abbasi: We want explanation on your Analysis from you and your masters and employers of newspaper:

Shame on You Ansar Abbasi: We want explanation on your Analysis from you and your masters and employers of newspaper:
شرم کرو انصار عباسی: تمہیں اور تمہارے اخبار کے مالکوں کو اس تجزیہ نگاری پر شرمندہ ہونا چاہیے اور تم لوگوں کو معافی مانگنی چاہیے۔
Today, The News has published an analysis (thumb nail is attached) written by Mr. Ansar Abbasi, in which he has severely criticized on stand taken by Altaf Hussain. In his Mr. Ansar Abbasi has created un-reasonable and cheap analogy of raising objection of conduct of Returning Officers with Holocaust. In his analogy he has said that “if Altaf Hussain is raising questions on Authority of Returning Officers then can he deny Holocaust”. Either Ansar Abbasi needs to go for his psychiatric checkup or he must have been drunk at the time when he was writing this analysis. Jews have power and potential to deal with their matter and it is hoped that soon they will question this gentleman on this matter of Holocaust. It is hoped that gentleman will tender thousand apologies silently.
آج کے اخبار دی نیوز میں انصار عباسی نے الطاف حسین کے اعتراض کو جو اُنھوں نے ریٹرنگ آفیسرز کے غیرزمہ دارانہ سوالات پر کیا ہے پر ایک انتہائی غیراخلاقی تجزیہ کیا ہے۔ اپنے اس تجزیے میں انھوں الطاف حسین کے موقف پر کوئی مضبوط دلیل نہ ہونے کے باعث ایک گری ہوئ مطابقت پیدا کرنے کی کوشش کی ہے۔ انھوں نے الطاف حسین کے موقف کے بارے میں کہا ہے کہ اگر وہ ریٹرنگ آفیسرز پر اعتراض کررہے ہیں تو کیا ہو برطانیہ میں ہیودیوں کی نسل کشی کو بھی جھوٹا کہہ سکتے ہیں۔ یا تو انصار عباسی کو اپنے دماغ کا چیک اپ کسی اچھے ڈاکٹر سے کروانا چاہیے ہا پھر وہ یقیننا اس وقت نشہ میں ہوں گے جب اس تجزیے کو لکھ رہے ہوں گے۔ بہرحال یہودیوں کی نسل کشی کی تذلیل کا معاملہ اُن پر ہی چھوڑ دیتے ہیں وہ اپنی عزت اور بقا کے معاملے خود ہی سنبھال سکتے ہیں اور وہ یقیننا انصارعباسی سے کسی میڈیم کے ذریعے پوچھ بھی لیں گئے اور یہ صاحب گڑگڑا کر معافی بھی مانگ لیں گے۔
Any person in right sense of mind can guess that when writing this analysis he was well informed that Punjab High Court stopped Returning officers from asking questions which are not provided in writing by candidates. Besides knowing this order he wrote this analysis against QET Altaf Hussain with cheap and dirty analogy. It is to be noted that after raising doubt by Altaf Hussain the Election Commission, and Supreme Court both have realized the overstepping of Ros beyond their mandate and thus have passed order and stopped Returning Officers from crossing the limits.
کوئی بھی صحیح الدماغ آدمی، اس بات کو سمچھ سکتا ہے کہ جب انصار عباسی اس تچزیے کو لکھ رہے تھے تو ان کو یہ پتا تھا کہ پنجاب ہائی کورٹ نے پہلے ہی تمام ریٹرنگ آفیسرز کو ایسے معاملات جو کہ الیکشن کیمیشن کے فارم میں نہیں مانگے گئے ہیں پر سوال کرنے سے منع کر دیا ہے۔ اس بات کو جاننے کہ باوجود انصار عباسی نے اس تچزیے کو نہ صرف یہ کہ لکھا بلکہ اس تچریے میں الطاف حسیں کے موقف کو غلط ثابت کرنے کہ لیے ایک انتہائی بے ہودہ مطابقت کرنے کی کوشش کی جس میں انھوں نے ریٹرنگ آفیسرز کے خلاف بات کرنے کو یہودیوں کی نسل کشی سے تشبیہ دے دی۔ یہ ایک انتہائی اہم نکتہ ہے کہ الطاف حسین کہ موقف کی تائید تو نہ صرف یہ کہ پنجاب ہائی کورٹ پلکہ سپریم کورٹ اور الیکشن کمیشن نے بھی کیا اور سب نے انھیں بیہودہ اور لغو سوالات کرنے سے منع کر دیا۔
Who is at right position, “either Ansar Abbasi alone” or “Altaf Hussain whose standing has been accepted by Supreme Court, Election Commission, and Punjab High Court”? If Altaf Husain’s Point of view “which is coherent with two court of law and election commission” is right then Mr. Ansar Abbasi must be ashamed and must tender unconditional apology to Altaf Hussain.
اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کون درست ہے؟ اکیلے انصارعباسی یا الطاف حسین جن کے موقف کی تائید پنجاب ہائی کورٹ، سپریم کورٹ اور الیکشن کمیشن سب نے کی ہے۔ اگر الطاف حسین کا موقف درست ہے تو انصارعباسی کو شرمندہ ہونا چاہیے اور ان کو الطاف حسین سے بلا کسی شرط کہ معافی مانگنی چاہیے۔
http://www.thenews.com.pk/Todays-News-13-22089-Can-Altaf-Bhai-speak-against-Jews-in-the-UK

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s